Heart touching Sad poetry in urdu

Sad poetry in urdu

خود پہ بیتی تو روتے ہو سسکتے ہو
وہ جو ہم نے کیا، کیا وہ عشق نہیں تھا
Khud Pe Beeti To Rotay Ho Sisaktay Ho
Woh Jo Hum Ne Kiya, Kya Woh Ishq Nahi Tha?

تجھ سے ہاروں تو جیت جاتا ہوں
تیری خوشیاں عزیز ہیں اتنی
Tujh Se Haaron To Jeet Jata Hoon
Teri Khushiyan Azeez Hain Itni

تمہارا ذکر صحیفے کی نعمتوں میں ہوا
ہم ایسے لوگ جو والعصر میں بیان ہوئے
Tumhara Zikr Sahefe Ky Naimatun Mein Huwa
Hum Ese Log Jo Wal-Asr Mein Bayan Huwe

دستک اور آواز تو کانوں کے لئے ہے
جو روح کو سنائی دے اسے خاموشی کہتے ہیں
Dastak Aur Awaz To Kaano Kay Liye Hai
Jo Rooh Ko Sunayi Day Ussay Ishq Kehte Hain

Poetry In Urdu for boys 2 Lines


کتنی راتیں بیتی گئی کتنے دن ڈھل گئے
جنھیں نہیں بدلنا تھا وہی لوگ بدل گئے
Kitne Raatein Beet Gye, Kitne Din Dhal Gye
Jinhein nahi badlna tha, Wohi log badal gye

جو مکمل ملتے نہیں
وہ مکمل بچھڑتے بھی نہیں
Jo Mukamal Miltay Nahi
Woh Mukamal Bicharrtay Bhi Nahi

ہم بہت گہری اداسی کے سوا
جس سے بھی ملتے ہیں کم ملتے ہیں
Hum Boht Gehri Udaasi Kay Siwa
Jis Se Bhi Miltay Hain Kam Miltay Hain

کون جیتا ہے زندگی اپنی
ہر کسی پہ کوئی مسلط ہے
Kon Jeeta Hai Zindagi Apni
Her Kisi Pe Koi Muslat Hai


تجھے بھولے کوئی ہموار دماغ
تیرے پامال کہاں بھولتے ہیں
اختر عثمان
Tujhe Bhoole Koi Humwar Dimagh
Tere Pamaal Kahan Bhoolte hein

بس یونہی چھوڑ دیا اس نے مجھے
ہائےاس نے مجھے آزمایا بھی نہیں
Bs Yuhe Chor Dya Ua Ny Mujy
Haye Us Ny Mujy Azmaya Bhe Nahi

کروٹیں دو ہی ہیں
اور دونوں طرف بے چینی ہے
Karwatein Do He Hein
Or Dono Taraf Be-Chaney Cheekhte Ha

تمہارے شہر کو جاتے یہ لاریوں والے
صدا نہیں لگاتے،مجھ پہ طنز کرتے ہیں
Tumhare Shehr Ko Jate Yeh Lariyo Wale
Sada Nahi Lagate, Mujh Py Tanz Karte Hein

Best Poetry In Urdu 2 Lines 2022

گہری باتیں سمجھنے کے لئے
گہری چوٹیں کھانی پڑتی ہیں
Ghere Baatein Samjhne Ky Lye
Ghere Chotein Khani Parte Hein

بات کا حل نِکالیئے صاحب
ایسے کیسے بھلا ، خدا حافظ
Baat Ka Haal Nikalye Sahib
Eee Kese Bhala, Khuda Hafiz

جانثاروں کو تِرے کب یہ خبر تھی، کہ تُجھے
دِل سے چاہیں گے، نِبھائیں گے، پشیماں ہوں گے
Jan Nisaro Ko Tere Kab Yeh Khabar The, Ky Tujy
Dil Sy Chahein Gyn, Nibahein Gyn, Pashema Hon Gyn

2 Lines dukhi shayari

تُو ہے سُورج تُجھے کیا معلوم رات کا دُکھ
تُو کِسی روز اُتر میرے گھر شام کے بعد
Tu Ha Suraaj Tujy Kiya Maloom Raat Ka dukh
Tu kese roz utar mere Ghr Shaam ky baad


کچھ مر سا گیا ہے اندر
اب میرا دل حسرتیں نہیں کرتا
Kuch Maar Sa Gya Ha Andr
Ab Dil Hasratein Nahi Karta

کافروں سے بدتر ہوتے ہیں
بیچ راستے میں چھوڑنے والے
Kaafiron Sy Baadtar Hein
Bech Raste Mein Chorne Wale

ان دنوں تعلق تھوڑا مظبوط رکھنا
دسمبر کے بچھڑ ے کبھی نہیں ملتے
In Dino Taluk Thora Mazbot Rakhna
December Ky Bechre Kabi Nahi Milte

Sad Poetry in Urdu 2 Lines 2022


تیری آوازوں سے ، تصویروں سے ، تحریروں سے
بھرے فُون آج بھی سامان میں , رَکھے ہوئے ہیں
Tere Awaz sy, Tasweero Sy, Tehrero Sy
Bhare Phone Aaj bhi Saman mein, Rakhe huwe hein
وہ توڑتا جوڑتا ہے روز مجھے
نقص کیا ہے مجھ میں بتاتا نہیں
Woh Torta Jorta Ha Roz Mujy
Nuqs Kiya Ha Mujh Mein Batata Nahi

دل دھڑکنے کا سبب یاد آیا
وہ تری یاد تھی اب یاد آیا
Dil Dharkne Ka Sabab Yaad Aya
Woh Tere Yaad The Ab Yaad Aya

Dukhi Shayari In Urdu 2 Lines 2022

مجھے لگتا ہے میرے خواب ادھورے رہ جائیں گے
مجھے شک ہے میری موت جوانی میں ہوگی
Mujy Lagta Ha Mere Khuwab Aadhore Reh Jyn Gyn
Mujy Shaq Ha Mwre Moat Jawani Mein Hoge

یوں ہی نہیں میں تیرے عشق میں بد نام
مجھے میسر ہے اس بدنامی میں سکون اپنا
Yuu He Nahi Mein Tere Ishq Mein Badnaam
Mujy Muyasr Ha Us badnami Mein Sukkon Apna

نظر کھا گی, ہم دونوں کی محبت کو
روز بات کرنے والے آج خاموش ہیں


Nazar Khaa Gye, Hum Dono ky Muhabbat Ko
Roz Baat karne wale aaj Khamosh Hein

عاشقوں کو جائز نہیں کفن دفن
مَریں تو یار کے در پہ پھینک آؤ
Ashqun Ko Jayiz Nahi Kafan Dafan
Marein To Yaar Ky Dar Py Phenk Ao

ساری دنیا سے لاتعلق ھوکر
آؤ چلو کہیں چاۓ پیتے ھیں
Sare Duniya Sy La-Taluk Ho Kar
Aao Chalein Kahein Chai Peete Hein

کیا اثاثہ ہے جسے کھو بھی نہیں سکتے ہیں
ہم ترے ہو کے ترے ہو بھی نہیں سکتے ہیں
Kiya Asasa ha jese kho bhi nahi sakte hum
Hum tere ho ky tere ho bhi nahi sakte hein

‏ایک حد تک اذیت سہنے کے بعد
خود کُشی کو حلال بتایا جائے
Ek Had Tk Aaziyat Shene Ky Baad
Khudkashi Ko Halal Btaya Jaye

میں نے جتنا تجهے پسند کیا
تو تھا نہیں اتنے کمال کا
Mein Ny Jitna Tujy Pasnd Kiya
Tu Tha Naii Itne Kamal Ka

نہیں ہے سنگ کوئی ہمسفر تو کیا ہوا
خاموشیاں ، ویرانیاں ، رسوائیاں تو ہیں
Nahi Ha Sang Koi Humsafar Tu Kiya Huwa
Khamoshiyan, Weraniya, Ruswaiya Tu Hein

اس کی آواز پہ میں دیر سے پہنچا تابش
ایسی تاخیر پہ اور باعثِ تاخیر پہ خاک
Uske Awaz py mein dair sy pouncha Tabish
Ese Takheer py or Bais E Takheer py Khaak

رات بہت دیر تلک گفتگو چلی
میرے اور صرف میرے درمیاں
Raat Bhut Dair Talak Guftugo Chale
Mere or Sirf Mere Darmiyan
غیروں میں بٹتی رہی تیری گفتگو کی چاشنی
تیری آواز جن کا رزق تھی وہ فاقوں سے مر گئے
Gairo Mein Bantti rahe tere guftugo ky chasni
Tere awaz jin ka rizq the woh faqo sy maar gye

محبتوں کے معاملے میں
تھوڑا بدنصیب ہوں میں
Muhabatun ky mamle mein
Thora badnaseeb ho mein
رخصت ہوا تو آنکھ ملا کر نہیں گیا
وہ کیوں گیا ہے یہ بھی بتا کر نہیں گیا
Rukhst huwa ankh mila kar bhi nahi gya
Woh kun Gya ha yeh bhi bata kar Nahi gya
اور بس میرا خُدا ہی جانتا ہے
میرے صبر کے پیچھے کا دُکھ
Or bas mera khuda he Janta ha
Mere sabr ky peche ka dukh
توجہ کی جو بھیک مانگ رہا تھا تم سے
وہ اپنے گھر کا سب سے لاڈلا لڑکا تھا
Tuwajah ky jo beekh mang rha tha tum sy
Woh apne ghar ka sab sy ladla larka tha

جب توقع ہی اٹھ گئی غالبؔ
کیوں کسی کا گلہ کرے کوئی
Jab tuwaqa he uth gye Ghalib
Kyun kese ka gila kare koi


جانے کس دن تجھ کو ہم
پاس بیٹھا کر دیکھیں گے
Jane kis din tujh ko hum
Pas betha kar dekhein gyn


ہر وہ شخص جھوٹا ہے جو کہتا ہے
کہ ؛ وہ حُسن سے مُتاثر نہیں ہوتا
Har woh shakhs jhota ha jo kehta ha
Ky, woh husn sy mutasir nahi hota


‏اس نے پھر غصے میں رکھا نہیں لفظوں کا خیال
میں نے بولا بھی تھا تیروں کی طرح لگتے ہیں
Usny phr ghusse mein rakha nahi lafzo ka khayal
Mein ny bola tha teero ky taraha lagte hein
وعدہ تھا ٹوٹ گیا، نشہ تھا اتر گیا
دل تھا بھر گیا، انسان تھا بدل گیا
Wada tha toot gya, Nasha tha utar gya
Dil tha bhar gya, Insan tha badal gya

2 Lines Poetry In Urdu Sad Poetry in urdu text


بدلے میں تمہیں کچھ تو وہ کہتے ہوں گے
ہنس ہنس کے دکھاتی ہو ادائیں جن کو
Badle mein tumhein kuch to woh kehte hon gyn
Hans Hans ky dekhati ho Adayein Jinko
دنیا کی محفلوں سے اکتا گیا ہوں یا رب
کیا لطف انجمن کا جب دل ہی بجھ گیا ہو
Dunya ki mehfilon se uktaa gya hn ya Rab
Kia lutf anjaman ka jab dil hi bujh gya h

————————–

کبھی خود پہ کبھی حالات پہ رونا آیا
بات نکلی تو ہر اک بات پہ رونا آیا
kabhi khud pe kabhi halaat pe rona aya
Bat nikli to har baat pe rona aya

—————————

بے نوا شہر کا سایہ ہےمرے دل پہ فراز
کس طرح سے مری آشفتہ خیالی جا ئے
Be-nawaa shahr ka saaya hai mere dil pe Faraz
Kis tarah se meri aashufta khyaali jaye

بیٹھ جاتی ہے میرے پہلو میں رات کو کچھ اس طر ح
میری تنہائی میرے گھر کا کوئی فرد ہو جیسے
Baith jati hy mery pehloo mein rat ko kuch is tarah
Meri tanhai mery ghar ka koi fard ho jaisy

ذوقِ جنون کو حد سے گزر جانے دو
وہ سمیٹنے آئے گا ہمیں بکھر جانے دو
ابھی دسترس میں ہوں تو احساس نہیں اس کو
رو رو کے پکارے گا ہمیں مر جانے دو

Zoq e junoon ko had sy guzar jany do
Woh sametny aega hamein bikhar jany do

Abhi dastras mein hun to ihsas nahi os ko
Ro ro k pukary ga hamein mar jany do

میں بھی بہت عجیب ہوں اتنا عجیب ہوں کہ بس
خود کو تباہ کر لیا اور ملال بھی نہیں

Mein Bhi Bohat Ajeeb Hun Itna Ajeeb Hun Keh Bas
Khud Ko Tabah Kar Liya Aur Malal Bhi Nahi


یقین نہ آۓ تو اِک بار پوچھ کر دیکھ لو

جو ہنس رہا ہے۔ وہ زخم سے چور نکلے گا

Yaqeen Na Aye Tu Ik Bar Poch Kar Dekho,
Jo Hans Raha Hai, Wo Zakhmo Se Chor Nikle Ga
Mil Raha Hai ‘ Na Khoo Raha Hai Too
Kitna Dil Chasb Ho Raha Hai Too

مِل رہا ہے٬ نہ کھو رہا ہے تُو
کتنا دلچسپ ہو رہا ہے تُو

2 lines Sad urdu Shayari

جو باتیں پی گیا تھا میں
وہ باتیں کھا گئیں مجھ کو

Jo Batain Pee Gaya Tha Main
Wo Baatain Khaa Gaen Mujh Ko

————————–

زندگی کب کی خاموش ہوگئی
دل تو بس عادتن دھڑکتا ہے

Zindagi Kab Ki Khamosh Hogae
Dil To Bas Aad’tan Dharakta Hai

——————————-

رویا ہوں تو اپنے دوستوں میں”
“پر تجھ سے تو ہنس کے ہی ملا ہوں

Roya Hoon To Apne Doston Mein
Per Tujh Say To Hans Kay Hi Mila Hon
داستان ختم ہونے والی ہے

تم میری آخری محبّت ہو

Dastaan Khatam Honay wali hai
Tum Meri Akhrii Muhabbat ho

—————————-

گھر بنا کر میرے دل میں وہ چھوڑ گیا
نا خود رہتا ہے اور نہ کسی کو بسنے دیتا ہے

Ghar Bana Kar Mere Dil Mein Wo Chor Gaya
Na Khud Rehta Hai Aur Na Kisi AUr Ko Basne Deta Hai

———————

فاصلوں کو ہی جدائی نہ سمجھ لینا تم
تھام کر ہاتھ یہاں لوگ جدا بیٹھے ہیں

Faslon ko hi judai na samjh laina tum
tham kar hath yahan log juda baithay hain

——————-

اب تو خواہش ہے یہ کہ سزا وہ ملے
روۓ جاؤں تو چپ نہ کراۓ کوئی

Ab to Khawhish Hai Ye Ke Saza Wo Milay,
Roye Jaon To Chup Na Krayae Koi.

Leave a Reply

Your email address will not be published.